مضامین بمتعلق ماحولیات

یہ مضمون پڑھیں

وہ مصر میں درختوں کو قتل کرتے ہیں

مائیکل ہنا، جو ایک مصری بلاگر اور فارماسسٹ ہیں، درختوں کے قتل اور قاہرہ کے مضافات ہلیو پولس میں قدیم ولاز کو منہدم کرنے کے متعلق اپنے رنج وغم کا اظہار کرتے ہیں. دیکھئے خطہ کے ممکنہ طور پر سب سے بڑے پام کے درخت کے ساتھ کیا ہوا.

یہ مضمون پڑھیں

بنگلادیش: ساحل سمندر کی صفائی

  9 اکتوبر 2012

بنگلہ دیش میں اس سال ساحل سمندر کی صفائی کےعالمی دن کے موقع پر ۳۰۰ سے زائد رضا کاروں نےحصہ لیا - کیوکرادنگ(Kewkradong) بنگلہ دیش بلاگ کے لئے فہیم عالم خان رپورٹ کرتے ہیں.

ایران : ماحولیاتی حکام کی طرف سے بلاگرز پر مقدمہ

  2 جون 2011

ھومن کھاپر،ایران میں ایک ماحولیاتی بلاگر پر بیورو چلانے کی ریاست کی طرف سے مقدمہ عائد، چرمحال بختیاری صوبے میں ماحولیاتی تحفظ کے لئے،اس علاقے کے ماحول کے لیے ایک گیس پائپ لائن منصوبے کے خطرات کے بارے میں انتباہ کے لئے. کھاکپر نے اپنے بلاگ میں وضاحت کی ہے...

یہ مضمون پڑھیں

پانی کے مسائل پر عالمی بلاگنگ مقابلہ

  19 مئی 2011

یورپی صحافت کے مرکز نے ایک تین ماہ کے بین الاقوامی بلاگنگ مقابلے کا آغاز کیا ہے۔ پانی کے مسائل پر توجہ مرکوز کر تے ہوئے جو کہ تھی!نک 5کہلایا جاتا ہے۔مختلف ممالک سے چالیس بلاگرز نے اس مقابلے میں شرکت کی، لسبن، پرتگال کے ایک سفر : آخری انعام...

عرب ممالک : “سوڈان پر رونا بند کرو”

  10 جنوری 2011

سوڈان میں آج آزادی ریفرنڈم ،نے ملک کو عرب ٹویٹرسفیر میں راڈار پر رکھ دیا۔ سعودی عرب سے فلسطین تک،عرب ٹویپس سوڈان کے اتحاد ، تقسیم، اور وسائل پر بحث کر رہےہیں۔ ریفرنڈم خرطوم مرکزی حکومت اور سوڈان پیپلز لبریشن آرمی / موومنٹ کے درمیان 2005 کے نویشا معاہدے کا...

انڈونیشیا : مغربی پاپوا میں اچانک رونُما ھونے والا سیلاب

  10 اکتوبر 2010

انڈونیشیا،مغربی پاپوا میں ویزیر کی دور دراز بستی میں سیلاب کی تباہی کے بعد ، اسّی سے زیادہ افراد ہلاک ہو گئے اور مزید سینکڑوں ابھی بھی لاپتہ ہیں۔ یہ شہر اب الگ تھلگ ہو گیا ہے جسکی وجہ سے ہنگامی امداد کے لیے نقل و حمل مشکل ہو گئی...

کویت : ٹماٹروں کو سڑنے دو !

  8 اکتوبر 2010

کویت میں ٹماٹر اب ایک ماہ قبل سے آٹھ گنا زیادہ مہنگے ہو گئے ہیں۔ اور انٹرنیٹ استعمال کرنے والے مسافت میں قیمتوں میں تبدیلی کو نہیں لے رہے۔ وہ وضاحت نہیں تلاش کر سکے کہ کیوں ٹماٹر کے ایک باکس کی قیمت صرف کچھ ہی دنوں میں آدھے دینارسے...