وں پر سب کی رسائی ہو سکےتمام زبانوں کی فہرست دیکھیں جن میں گلوبل وائسز پر ترجمہ کیا جاتا ہے تاکہ دنیا بھر کی کہانیا

لاطینی امریکاخواتین پر تشدد کے خلاف ٹوئٹر پر سرگرم

Image tweeted by Mexican legislator Alejandro Montano Twitter user @lejandromontano.

میکسیکو کے رکن اسمبلی آلی ھاندرو مونتانو @lejandromontano کی جانب سے ٹویٹ کی گئی تصویر

خواتین پر تشددکے خاتمے کے عالمی دن پر سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئیٹر پر لاطینی امیریکیوں نے  ہیش ٹیگ کی سیریز کا استعمال کرتے ہوئے مہم کی حمایت کا اظہار کیا ،اس دن کو منانے کا آغاز ڈومینین ریپبلک اور کولمبیا سے ہوا۔

پچیس نومبر  انیس سو ساٹھ میں ڈومینیکن حکمران رافیل لیونیڈاز ٹروجیلو نے تین خواتین سیاسی کارکنوں کی پھانسی کا حکم سنایا ،اور یہ ہی عمل ڈومینیکن ریپبلک میں آمریت کے خاتمے کی وجہ بنا ۔

جولائی انیس سو اکیاسی میں اٹھارہ سے اکیس جولائی تک کولمبیا کے شہر  بوگوٹا میں لاطینی امریکا اور کیریبین کے ہونے والے حقوق نسواں کے تحفظ کا اجلاس ہوا ، جس میں رافیل کے اس فیصلے کے خلاف اسی ممالک نے متفقہ طور پر یہ دن منانے کا اعلان کیا تھا ۔

خواتین پر تشدد نہ منظور ،گلاب کی پتی سے بھی نہیں ، کے ہیش ٹیگس کے ساتھ مہم سے حمایت کا اظہار کیا گیا ،، کولمبین اداکاروں ماونیکا فونسیا اور جوان پابلو راو نے بھی ٹوئٹر پر  اپنی تصویر شئیر کی جس میں انہوں نے سرخ لپ اسٹک لگا کر خواتین پر تشدد کے خلاف منائے جانے والے دن کی حمایت کا اظہار کیا ،انہوں نے ٹویٹ کیا

یوتھ کے لئے یوتھ کے ساتھ مل کر تبدیلی کی جانب ایک کوشش۔

ٹی وی میزبان اور ماڈل لارا پنزون نے ٹویٹ کیا کہ:

#ForTheWomen

بہترین مہم خواتین کے خلاف تشدد کے لئے دنڈ سے مستثنی کا اعتراف کرنے تک ہی محدود نہیں ۔ہے #NotEvenWithThePetalOfARose

ڈومینیکا کی بیٹی سینز نے زمہ داری نبھانے کا پیغام  دیا:

خواتین اور لڑکیوں پر ہونے والے تشدد کو روکنا ہم سب کی زمہ داری ہے۔

.#NoViolenceAgainstWomenDay

میکسیکو کے رکن اسمبلی ایلیحاندرو مونٹانو نے کہا کہ بہتر معاشرہ وہ ہوتا ہے جہاں خواتین کے  ساتھ بدسلوکی نہیں کی جاتی:

بہترین معاشرہ وہ ہے جو خواتین کے ساتھ بد سلوکی نہیں کرتا، ان کو دکھ اور تکلیف نہیں دیتا

#NoViolenceAgainstWomenDay

ٹوئٹر صارف ایلی سینڈرا سانگلیا نے اہم موضوع کی طرف توجہ دلاتے ہوئے کہ کبھی کبھی خواتین پر خواتین ہی تشدد کرتی ہیں

بد ترین تشدد جو میں نے آج تک دیکھا ایک خاتون کا خاتون پر تشدد ہے۔ خاص کر شدت پسند خواتین کی جانب سے نسائی خواتین پر ظلم۔

ایک اور ٹوئٹرصارف نکیٹا اروبو نے سب کو اس مہم کی حمایت کے اعلان کی دعوت دی:

بیٹیاں، بہنیں، آنٹیاں، مائیں، دادیاں، دوست، کزنز سب متحد ہیں۔

#NoViolenceAgainstWomenDay

heforshe کی ٹوئٹر مہم امریکا سے تعلق رکھنے والی ایک خاتو ن نے چلائی۔ خواتین پر تشدد کے خلاف دن کولمبیا اور اس کے اطراف میں بھرپور طور پر منایا گیا ،جس میں جنسی مساوات کو فروغ دینے اور خواتین پر تشدد کے خلاف آواز اٹھانے پر زور دیا گیا ،جرنل ہمانم میں بھی اس موضوع پر تفصیلی طور پر تذکرہ کیا گیا۔
گلوبل وائسز نے بھی ہمیشہ ہی خواتین اورجنسی موضوعات سے متعلق مسائل پر خصوصی توجہ دی ہے۔ اور اس سال جنسی بنیادوں پر تشدد کے خاتمے کے 16 دن کی آن لائن تحریک کا اجراء کیا۔

بات چیت شروع کریں

براہ مہربانی، مصنف لاگ ان »

ہدایات

  • تمام تبصرے منتظم کی طرف سے جائزہ لیا جاتا ہے. ایک سے زیادہ بار اپنا ترجمہ جمع مت کرائیں ورنہ اسے سپیم تصور کیا جائے گا.
  • دوسروں کے ساتھ عزت سے پیش آئیں. نفرت انگیز تقریر، جنسی، اور ذاتی حملوں پر مشتمل تبصرے کو منظور نہیں کیا جائے.